• To make this place safe and authentic we allow only registered members to participate Registration is easy and will take only 2 minutes of your time PROMISE

کیا جال بُنا ہے پلکوں کا، اَبرُو تلوار سے تیکھے ہیں

کیا جال بُنا ہے پلکوں کا، اَبرُو تلوار سے تیکھے ہیں
جو دیکھے اِنھیں شکار بَنے، یہ داﺅ کہاں سے سیکھے ہیں؟
(شاعر: طارق اقبال حاوی)
 
Top