• To make this place safe and authentic we allow only registered members to participate Registration is easy and will take only 2 minutes of your time PROMISE

Information (jiska kam usi ko sajhe )ایک مراثی بادشاہ کا عزیز ترین حجام تھا۔


ایک مراثی بادشاہ کا عزیز ترین حجام تھا۔ یہ روزانہ بادشاہ کے پاس حاضر ہوتا تھا۔ اور دو تین گھنٹے اس کے ساتھ رہتا۔ اس دوران بادشاہ سلطنت کے امور بھی سرانجام دیتا رہتا، اور حجامت اور شیو بھی کرواتا رہتا تھا۔
ایک دن نائی نے بادشاہ سے عرض کیا، حضور میں وزیر کے مقابلے میں آپ سے زیادہ قریب ہوں۔ میں آپ کا وفادار بھی ہوں۔ آپ اس کی جگہ مجھے وزیر کیوں نہیں بنا دیتے۔
بادشاہ نے مسکرا کر حجام کی طرف دیکھا اور اس سے کہا،
میں تمہیں وزیر بنانے کیلئے تیار ہوں۔ لیکن تمہیں اس سے پہلے ٹیسٹ دینا ہوگا۔
نائی نے سینے پر ہاتھ باندھ کر کہا،
'آپ حکم کیجئے'
بادشاہ بولا۔ بندرگاہ پر ایک بحری جہاز آیا ہے۔ مجھے اس کے بارے میں معلومات لا کر دو۔
نائی بھاگ کر بندرگاہ پر گیا۔ اور واپس آ کر بولا۔ جی جہاز وہاں کھڑا ہے۔
بادشاہ نے پوچھا۔ یہ جہاز کب آیا؟ نائی دوبارہ سمندر کی طرف بھاگا، واپس آیا، اور بتایا، 'دو دن پہلے آیا'
بادشاہ نے کہا۔ یہ بتاﺅ یہ جہاز کہاں سے آیا؟ نائی تیسری بار سمندر کی طرف بھاگا، واپس آیا، تو بادشاہ نے پوچھا جہاز پر کیا لدا ہے؟
نائی چوتھی بار سمندر کی طرف بھاگ کھڑا ہوا۔
قصہ مختصر۔ نائی شام تک سمندر اور محل کے چکر لگا لگا کر تھک گیا۔
اس کے بعد بادشاہ نے وزیر کو بلوایا اور اس سے پوچھا۔ کیا سمندر پر کوئی جہاز کھڑا ہے؟
وزیر نے ہاتھ باندھ کر عرض کیا۔
جناب دو دن پہلے ایک تجارتی جہاز اٹلی سے ہماری بندرگارہ پر آیا تھا۔ اس میں جانور، خوراک اور کپڑا لدا ہے۔ اس کے کپتان کا نام یہ ہے۔ یہ چھ ماہ میں یہاں پہنچا۔ یہ چار دن مزید یہاں ٹھہرے گا۔ یہاں سے ایران جائے گا۔ اور وہاں ایک ماہ رکے گا۔ اور اس میں دو سو نو لوگ سوار ہیں۔ اور میرا مشورہ ہے ہمیں بحری جہازوں پر ٹیکس بڑھا دینا چاہیے۔
بادشاہ نے یہ سن کر حجام کی طرف دیکھا۔
حجام نے چپ چاپ استرا اٹھایا اور عرض کیا۔
"کلماں چھوٹیاں رکھاں کہ وڈیاں"​
 
Last edited:
Let him do his work (Jis ka kam usi ko sajhe)

He was the beloved barber of a Marathi king. It was presented to the king daily. And lived with him for two or three hours. During this time, the king also carried out the affairs of the kingdom, and also did shaving and shaving.
One day the barber asked the king, "I am closer to you than the minister." I am also loyal to you. Why don't you make me a minister instead?
The king smiled and looked at the barber and said to him,
I am ready to make you a minister. But you have to take the test first.
The barber tied his hands to his chest and said,
'You order'
The king said. A ship has arrived at the port. Bring me information about it.
The barber ran to the port. And he came back and spoke. Yes, the plane is standing there.
The king asked. When did this ship arrive? The barber ran to the sea again, came back, and said, 'Came two days ago'
The king said. Where did this plane come from? The barber ran to the sea for the third time, came back, then the king asked what is loaded on the ship?
The barber ran to the sea for the fourth time.
Short story The barber was tired of walking around the sea and the palace until evening.
The king then called the minister and asked him. Is there a ship at sea?
The minister tied his hands and asked.
Sir, two days ago a merchant ship came to our port from Italy. It is loaded with animals, food and clothing. Here is the name of its captain. It arrived here in six months. It will stay here for four more days. From here it will go to Iran. And will stay there for a month. And two hundred and nine people are on board. And I suggest we increase taxes on ships.
When the king heard this, he looked at the barber.
The barber quietly picked up the razor and asked.
"Keep the words small or big"
 
Top