• To make this place safe and authentic we allow only registered members to participate Registration is easy and will take only 2 minutes of your time PROMISE

Please guide Fasting for pregnant and lactating women (حاملہ اور دودھ پلانے والی کا روزہ)

حاملہ اور دودھ پلانے والی کا روزہ


سیدنا انس بن مالک کعبی رضی اللہ عنہ بیان کرتے ہیں کہ نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا :
إِنَّ اللہَ وَضَعَ عَنِ الْمُسَافِرِ الصَّوْمَ وَشَطْرَ الصَّلَاۃِ، وَعَنِ الْحُبْلَی وَالْمُرْضِعِ .
اللہ نے مسافر کو روزہ اور نماز کا نصف معاف کر دیا ہے، اسی طرح حاملہ اور دود ھ پلانے والی کو بھی۔''
(سنن النسائی : ٢٣١٥، وسندہ حسن)
اس حدیث کو امام ترمذی رحمہ اللہ نے ''حسن'' اور امام ابنِ خزیمہ رحمہ اللہ (٢٠٤٤)نے''صحیح'' کہا ہے ۔
یاد رہے کہ اس حدیث میں صرف روزہ اور نماز کے وقتی طور پر معاف ہونے کا ذکر ہے، قضا دینی ہے یا نہیں ، حدیث کا ظاہر اس بارے میں خاموش ہے، اس لئے فہم صحابہ سے اس کا معنی متعین کیا جائے گا۔
سیدنا عبداللہ بن عمر رضی اللہ عنہما سے حاملہ کے بارے میں پوچھا گیا جسے اپنے بچے کے نقصان کا خطرہ ہے ،فرمایا ، وہ روزہ چھوڑ دے ، اس کے بدلے میں ایک مسکین کو ایک ''مد ''(تقریباً نصف کلو گرام)گندم دے دے ۔(السنن الکبرٰی للبیہقی : ٤/٢٣٠، وسندہ، صحیح)
سیدنا عبداللہ بن عمر رضی اللہ عنہما سے ایک حاملہ نے روزے کے بارے میں پوچھا تو فرمایا : أفطری ، وأطعمی عن کلّ یوم مسکیناً ولا تقضی ۔
''روزہ چھوڑ دیں اور ہر دن کے بدلے ایک مسکین کو کھانا کھلادیں ، قضائی نہ دیں ۔''
(سنن الدارقطنی : ١/٢٠٧، ح : ٢٣٦٣، وسندہ، صحیح)
نافع رحمہ اللہ بیان کرتے ہیں کہ سیدنا عبداللہ بن عمر رضی اللہ عنہما کی بیٹی ایک قریشی کے نکاح میں تھیں ، وہ حاملہ تھیں ، رمضان میں اس نے پیاس محسوس کی تو آپ نے اسے حکم دیا کہ روزہ چھوڑ دیں، ہر روزے کے بدلے میں ایک مسکین کو کھانا کھلا دیں ۔(سنن الدارقطنی : ١/٢٠٧، ح : ٢٣٦٤، وسندہ، صحیح)
سیدنا عبداللہ بن عباس رضی اللہ عنہما فرمانِ باری تعالیٰ ( وعلی الّذین یطیقونہ فدیۃ )(البقرۃ : ١٨٤)کی تفسیر میں فرماتے ہیں : أثبتت للحبلٰی والمرضع ۔ ''یہ آیت حاملہ اور دودھ پلانے والی کے لیے ثابت (غیر منسوخ) رکھی گئی ہے ۔''(سنن ابی داو،د : ٢٣١٧، وسندہ، صحیح)
سعید بن جبیر رحمہ اللہ حاملہ اور دودھ پلانے والی جو اپنے بچے کے حوالے سے خائف ہو، کے بارے میں فرماتے ہیں کہ روزہ نہ رکھیں ، ہر روزے کے بدلے میں ایک مسکین کو کھانا کھلا دیں ، چھوڑے ہوئے روزے کی قضائی بھی ان دونوں پر نہیں ہے ۔
(مصنف عبد الرزاق : ٤/٢١٦، ح : ٧٥٥٥، وسندہ، صحیح)
سعید بن مسیب رحمہ اللہ (تفسیر الطبری : ٢٧٥٨، وسندہ حسن)اور عکرمہ(تفسیر الطبری : ٢٧٤٨، وسندہ صحیح) کا بھی یہی موقف ہے ۔
بعض اہل علم کہتے ہیں کہ حاملہ اور مرضعہ فدیہ کے ساتھ روزے کی قضا بھی دیں گی، ان کا یہ موقف بے دلیل ہے۔
الحاصل : حاملہ اور دودھ پلانے والی دونوں روزہ نہ رکھیں ، ہر روزے کے بدلے ایک مسکین کو کھانا کھلا دیں ، ان پر قضائی نہیں ۔
English Translation
Fasting for pregnant and lactating women

Anas ibn Malik Ka'bi (may Allah be pleased with him) narrates that the Holy Prophet (peace and blessings of Allah be upon him) said:

ِّنَّ اللََهَ وَضَعَ عَنِ الْمُسَافِرِ الصَّوْمَ وَشَطْرَ الصَّلاَۃِ وَعَنِ الْحُبْلَى وَالْمُرْضِعِ.

Allah has forgiven the traveler half of the fast and the prayer, as well as the pregnant and the lactating woman.
(Sunan al-Nisa'i: 2, Wasinda Hassan)
This hadith has been called "Hasan" by Imam Tirmidhi (may Allah have mercy on him) and "Sahih" by Imam Ibn Khazeema (may Allah have mercy on him).

Remember that this hadeeth only mentions the temporary forgiveness of fasting and prayers, whether qadha is to be given or not, the appearance of the hadeeth is silent about it, so its meaning will be determined by the understanding companions
Abdullah ibn Umar (may Allah be pleased with him) was asked about a pregnant woman who is in danger of harming her child. She said that she should break her fast. Give it. (Al-Sunan al-Kubra for Al-Bayhaqi: 1/3, Wasinda, Sahih)

When a pregnant woman asked Abdullah ibn Umar about fasting, he said: “Fasting, and feeding on every day of misery, and not fasting.”
"Break the fast and feed one poor person for every day, do not give justice."
(Sunan al-Darqatani: 1/3, H: 2, Wasinda, Sahih)
Nafi '(may Allaah have mercy on him) narrates that the daughter of' Abdullah ibn 'Umar (may Allaah be pleased with her) was married to a Quraysh. She was pregnant. When she felt thirsty in Ramadaan, he ordered her to break her fast. Feed a poor person. (Sunan al-Darqatani: 2/1, H: 2, Wasinda, Sahih)

Sayyidna Abdullah ibn Abbas (may Allah be pleased with him) says in his commentary on the command of the Almighty (and upon those who do not pay the ransom) (Al-Baqarah: 2): "This verse has been established for pregnant and lactating women (non-abrogated)." (Sunan Abi Dawood, D: 2, Wasinda, Sahih)

Sa'eed ibn Jubayr (may Allaah have mercy on him) said about a pregnant woman and a breastfeeding mother who is afraid of her child, “Do not fast, feed one poor person in return for every fast.” do not have .
(Author Abdul Razzaq: 1/3, H: 1, Wasinda, Sahih)
Saeed ibn Musaib (may Allah have mercy on him) (Tafsir al-Tabari: 1, Wasinda Hasan) and Ikrimah (Tafsir al-Tabari: 1, Wasinda Sahih) have the same position.
Some scholars say that she will make up the missed fasts along with the pregnant woman. This is their argument.
Achievements: Do not fast both pregnant and lactating women, feed one poor person for every fast, not judging them.
 
Top